Home Cricket شاہنواز دہانی کا آبائی علاقے لاڑکانہ پہنچنے پر بادشاہوں کی طرح استقبال

شاہنواز دہانی کا آبائی علاقے لاڑکانہ پہنچنے پر بادشاہوں کی طرح استقبال



 پی ایس ایل 6 کی فاتح ملتان سلطانز کی کامیابی میں اہم کردار ادا کرنے والے نوجوان فاسٹ بولر شاہنواز دہانی کا آبائی علاقہ لاڑکانہ پہنچنے پر والہانہ انداز میں شاندار استقبال کیا گیا۔

ٹائٹل کے حصول کے بعد پہلی مرتبہ اپنے آبائی گاؤں آنے والے شاہ نواز دہانی کا لاڑکانہ شہر میں داخل ہونے پر پولیس ٹریننگ سینٹر کے سامنے خیرمقدم کیا گیا،لاڑکانہ کے شہریوں اور کرکٹ کے مداحوں نے طویل القامت فاسٹ بولر پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں اور ہارپہنائے۔ شاہنواز داہانی خیرمقدمی نعروں کا جواب سندھ کے روایتی انداز میں ہاتھ جوڑ کر ادا کرتے رہے،فرط جذبات سے شاہنواز  داہانی کے بوسے بھی لیے گئے۔

بعد ازاں وہ ایک بڑے جلوس کی شکل میں لاڑکانہ سے ایک میل دور اپنے آبائی گاؤں کھاوڑ خان داہانی پہنچے تو دوست احباب، عزیز واقارب، قریبی رشتہ داروں اور علاقہ مکینوں  نے ان کا والہانہ استقبال کیا اور پرجوش انداز میں اپنے جذبات کا اظہار کیا۔ قبل ازیں کراچی سے جامشورو پہنچنے پر بھی ان کا پرتپاک استقبال ہوا۔

5 اگست 1998 کو لاڑکانہ میں پیدا ہونے  والے 6 فٹ 2 انچ کی قامت کے فاسٹ بولر شاہنواز داہانی نے پی ایس ایل 6 میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ملتان سلطانز کی جانب سے 11 میچز میں 24 وکٹیں حاصل کیں۔ لیگ کا بہترین بولر قرار دیے جانے کے ساتھ پی ایس ایل 6الیون میں شامل کیے جانے والے شاہنواز داہانی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسے اپنے لیے ایک اعزاز قرار دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پہلی مرتبہ ہی پی ایس ایل میں شرکت کرکے عمدہ کارکردگی پر بہت مسرور  اور اس پر اللہ کا شکر ادا کرتا ہوں،انہوں نے پرتپاک استقبال پر اپنے مداحوں اور اہلیان لاڑکانہ کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا، انہوں نے نے اس امر پر بھی اظہار مسرت کیا کہ پی ایس ایل کے دوران  لاڑکانہ کےمختلف مقامات پر بڑی اسکرینز لگاکر میچز دیکھنے کے مواقع فراہم کیے گئے۔

اس موقع پر شاہنواز داہانی نے نوجوان کھلاڑیوں کو بھرپور محنت کرنے کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ میں بھی اپنے عزم، لگن اور جزبہ کی بدولت کامیابی کی منزل طے کرتا رہا، نوجوان کھلاڑی بھی اپنے شعبوں میں بھرپور محنت کریں تو کامیابی ان کے قدم چومے گی ،کامرس میں گریجویشن کرنے والے شاہنواز داہانی نے کھیل کے ساتھ ساتھ  نوجوانوں پر تعلیم کے حصول پر بھی زور دیا،انہوں نے زمبابوے کے خلاف ٹیسٹ سیریز کے بعد اب دوبارہ  پاکستان کی نمائندگی ملنے پر  خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میری کوشش ہوگی کہ عمدہ سے عمدہ کارکردگی دکھا کر اپنے ملک اور قوم کا نام روشن کروں، امید ہے کہ توقعات پر پورا اتروں گا۔

(function() {

var loaded = false;
var loadFB = function() {
if (loaded) return;
loaded = true;
(function (d, s, id) {
var js, fjs = d.getElementsByTagName(s)[0];
if (d.getElementById(id)) return;
js = d.createElement(s);
js.id = id;
js.src = “http://connect.facebook.net/en_US/sdk.js#xfbml=1&version=v3.0”;
fjs.parentNode.insertBefore(js, fjs);
}(document, ‘script’, ‘facebook-jssdk’));
};
setTimeout(loadFB, 0);
document.body.addEventListener(‘bimberLoadFbSdk’, loadFB);
})();